پی ٹی آئی رہنما ء یاسمین راشداور عندلیب عباس لاہور سے گرفتار

پی ٹی آئی رہنما ء یاسمین راشداور عندلیب عباس لاہور سے گرفتار

لاہور: پنجاب پولیس نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی سینئر رہنما ڈاکٹر یاسمین راشد اور عندلیب عباس کو لاہور سے گرفتار کر لیا۔

گرفتار رہنما ء آزادی لانگ مارچ کے لیے اسلام آباد جا رہے تھے کہ پولیس نے انہیں شہر کے علاقے ٹمبر مارکیٹ سے حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق آزادی لانگ مارچ کے شرکاء کو اسلام آباد پہنچنے سے روکنے کے لیے لاہور پولیس کی نفری کو متحرک کر دیا گیا ہے۔

پہلے دن میں، پولیس نے یاسمین راشد کی گاڑی پر حملہ کیا اور ونڈ اسکرین کو توڑ دیا جب وہ لاہور میں بتی چوک کی طرف جارہی تھیں۔

لاہور کے بتی چوک پر پولیس نے پی ٹی آئی کے کارکنوں کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کی شیلنگ کی جب انہوں نے راستے بند کرنے کے لیے کھڑی کی گئی رکاوٹیں ہٹا ئیں۔

پولیس نے سابق وزیر صحت کی گاڑی کو آگے بڑھنے سے روکنے کی کوشش میں گھیرے میں لے لیا۔ سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ویڈیو کے مطابق پی ٹی آئی کا ایک سپورٹر سامنے آیا اور پولیس اہلکاروں کو گالی گلوچ کی۔

اس دوران یاسمین نے پولیس کو اپنی گاڑی کی چابیاں لینے سے روکنے کی کوشش کی۔ ڈاکٹر یاسمین راشد کا پارٹی کارکنوں کو شہر سے باہر جانے سے روکنے پر تعینات پولیس اہلکاروں سے جھگڑا ہوا۔

پولیس اہلکاروں نے پی ٹی آئی رہنما کو بتایا کہ وہ نہیں جا سکتی لیکن انہوں نے کوئی توجہ نہیں دی اور گاڑی آگے بڑھاتی رہی۔ پولیس نے لاٹھی چارج کا سہارا لیا اور گاڑی کی ونڈ اسکرین توڑ دی، لیکن وہ اپنا راستہ بنانے میں کامیاب ہوگئیں۔

مزید پڑھیں:حکومت کے ساتھ ڈیل کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، عمران خان

پی ٹی آئی کے لاہور چیپٹر نے اپنے کارکنوں کو آج بتی چوک پر جمع ہونے کو کہا تھا جہاں سے وہ اسلام آباد روانہ ہونا تھے۔ جھڑپوں کے دوران متعدد پارٹی کارکنوں کو حراست میں لے لیا گیا۔

تبصرے: 0

آپ کا ای میل پتہ شائع نہیں کیا جائے گا۔ مطلوبہ فیلڈز * کے ساتھ نشان زد ہیں