بلوچستان کے جنگلات میں لگی آگ پر 14 روز بعد قابو پالیا گیا

بلوچستان کے جنگلات میں لگی آگ پر 14 روز بعد قابو پالیا گیا

کوئٹہ: بلوچستان کے ضلع شیرانی میں لگنے والی آگ پر 14 روز کی جدوجہد کے بعد قابو پالیا گیا ہے۔

بہت بڑی اراضی پر آگ کے پھیلاؤ کی وجہ سے پائن نٹ اور زیتون کے جنگلات تباہ ہو گئے۔ تمام متعلقہ محکموں کی کوششوں سے آگ پر قابو پالیا گیا۔

پی ڈی ایم اے کے ساتھ پاک فوج اور ایف سی کے دستے بھی ریسکیو مشن میں حصہ لے رہے ہیں۔ ایران نے بھی آگ پر قابو پانے میں پاکستان کی مدد کی، ایران کی جانب سے آگ پر قابو پانے کے لئے نے فائر فائٹنگ جیٹ بھیجا گیا۔

اس سے قبل ایران نے آگ پر قابو پانے کے لیے پاکستان کی مدد کے لیے ایک فائر فائٹنگ جیٹ اور ایک واٹر ٹینکر بھیجا تھا۔

بلوچستان اور خیبرپختونخوا کے سنگم پر واقع جنگل کی آگ خیبر پختونخواہ کے علاقے سے شروع ہوئی لیکن تیز ہواؤں کے باعث یہ شیرانی اور موسیٰ خیل سمیت دیگر علاقوں تک پھیل گئی۔

مزید پڑھیں:کیا حکومت بلوچستان کے جنگلات میں لگی آگ پر قابو پانے میں ناکام ہو چکی ہے؟

کوہ سلیمان کو دنیا کے سب سے بڑے چلغوزہ (صنوبر) کے جنگل کے طور پر بھی جانا جاتا ہے۔ 26,000 ہیکٹر پر مشتمل جنگل سالانہ 640,000 کلو گرام چلغوزے پیدا کرتا ہے۔

تبصرے: 0

آپ کا ای میل پتہ شائع نہیں کیا جائے گا۔ مطلوبہ فیلڈز * کے ساتھ نشان زد ہیں