کراچی میں چوری کا 80تولہ سونا لوٹنے والے سی آئی اے کے 6 اہلکار گرفتار

Karachi police arrested 31 accused

کراچی : گلستان جوہر انویسٹی گیشن پولیس نے اسپیشل انویسٹی گیشن سی آئی اے سینٹر میں چھاپہ مار کر 6 افراد کو گرفتار کر لیا، ملزمان پر 80 تولہ سونے کی خوردبرد کا الزام تھا۔

انویسٹی گیشن ایسٹ زون ون کے ایس پی الطاف حسین نے بتایا کہ 24 جون کو گلستان جوہر تھانے کی حدود میں ایک بنگلے میں 80 تولے سونا چوری کی واردات ہوئی تھی، واردات مقدمہ گلستان جوہر تھانے میں درج ہے۔

پولیس نے تفتیش کے دوران بنگلے میں کام کرنے والی ماسی کو حراست میں لیا تو اس نے انکشاف کیا کہ چند روز قبل ایس آئی یو (سی آئی اے ) سینٹر صدر نے ان کے گھر چھاپہ مار ا تھا اور سونا برآمد کرلیا تھا اور مبینہ طور پر بھاری رشوت وصول کرنے کے بعد مجھے گرفتار ہی نہیں کیا گیا۔

ملازمہ کے انکشافات کے بعد پولیس نے سی آئی اے صدر میں چھاپہ مار کر پولیس پارٹی کے انچارج ایک سب انسپکٹر ، دو اے ایس آئی اور تین کانسٹیبلوں کو گرفتار کرکے 65 تولہ سونا برآمد کرلیا، جو انھوں نے چوری کرنے والی گھریلو ملازمہ سے برآمد کیا تھا۔

مزید پڑھیں:کراچی، ملیرجیل میں رینجرز کا سرچ آپریشن، گلشنِ اقبال میں پولیس مقابلہ،4ڈاکوگرفتار

ذرائع کے مطابق گرفتار پولیس اہلکاروں میں سب اسپکٹر ممتاز احمد، اے ایس آئی اسراراحمد ، اے ایس آئی محمد عمران، کانسٹیبل آصف، شعیب اور شوکت شامل ہیں، جب کہ جاوید نامی ملزم فرارہے جس کی گرفتاری کے لیے پولیس چھاپے مار رہی ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ 24 جون کو گلستان جوہر میں محمد عرفان نامی شہری کے گھر سے گھریلو ملازمہ جنا 80 تولہ سونا چوری کر کے فرار ہو گئی تھی۔

سونا چوری ہونے کی واردات کا مقدمہ حناء زوجہ روبن مسیح کے خلاف گلستان جوہر تھانے میں درج کیا گیا تھا اور اسپیشل انویسٹی گیشن یونٹ کے اہلکاروں نے گھریلو ملازمہ کو حراست میں لیا تھا، اور چوری شدہ سونا بطور رشوت لے کر ملزمہ کو رہا کردیا تھا۔

گلستان جوہر انویسٹی گیشن پولیس نے دوران تفتیش سونا چوری کی واردات میں ملوث گھریلو ملازمہ کو گرفتار کیا گیا تو اس نے بتایا کہ سارا سونا اسپیشل انویسٹی گیشن یونٹ کے اہلکار جمع کرکے لے گئے ہیں اور اسے گرفتار بھی نہیں کیا گیا۔