وزیر اعظم کا این آر او نہ دینے کا اعلان عدلیہ کی توہین ہے۔احسن اقبال کی رائے

موسم

قیمتیں

ٹرانسپورٹ

سابق وفاقی وزیر برائے پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ احسن اقبال نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے این آر او نہ دینے کا اعلان کرکے عدلیہ کی توہین کی ہے، چیف جسٹس کو اس کا نوٹس لینا چاہئے۔

مسلم لیگ (ن) رہنما احسن اقبال نے اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی صحت کےحوالے سے ہمیں سخت تشویش ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سینیٹر حمد اللہ کی شہریت بحال، ٹی وی چینل جانے پر عائد پابندی بھی ختم

احسن اقبال نے وزیر اعظم  پر الزام لگایا کہ نواز شریف کی صحت عمران خان کی وجہ سے خراب ہوئی، اور دی گئی طبی سہولیات واپس لے لی گئیں جبکہ نواز شریف کو ضمانت ملنے سے گھٹن کا ماحول ختم ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم این آر او نہ دینے کا بار بار اعلان کرتے ہیں، یہ بتائیں ان سے این آر او کس نے مانگا؟ ان کا اعلان یہ تاثر دیتا ہے کہ عدالتیں آزاد نہیں ہیں اور عمران خان کے کہنے پر فیصلے کیے جاتے ہیں۔ چیف جسٹس کو نوٹس لینا چاہئے۔ 

یاد رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ (ن) کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہاکہ نواز شریف سے محبت کرنے والوں سے درخواست ہے کہ نواز شریف کی صحت کے لئے خصوصی دعا کی جائے،ان کی صحت کے حوالے سے خدشات ہیں لیکن وہ سٹیبل ہیں اللہ انہیں مکمل صحت عطا فرمائے۔

ان کا کہنا تھا کہ  نواز شریف کی کنڈیشن کے حوالے سے دنیا بھر میں لکھا گیا کہ اس حالت میں مریض کو ٹینشن نہیں دینی چاہئے ،اس حالت میں مریض کو ٹینشن دینا زہر دینے کے مترادف ہے لیکن اس کے باوجود مریم نواز کو رات 2 بجے واپس جیل جانے کو کہا گیا۔

مزید پڑھیں: نواز شریف کی صحت کے لئے خصوصی دعا کی جائے،احسن اقبال کی اپیل