کراچی میں گرین لائن سروس کا آغاز، بس منصوبے کی تفصیلات کیا ہیں؟

پی ٹی آئی حکومت نے کراچی کے شہریوں کو بڑی خوشخبری سناتے ہوئے عوام سے کیا گیا جدید ٹرانسپورٹ کا وعدہ پورا کردیا ، آج وزیر اعظم گرین لائن بس سروس کا افتتاح کریں گے جس کی تفصیلات سامنے آگئی ہیں۔ 

وزیر اعظم عمران خان اور تحریکِ انصاف سندھ کی قیادت کا کہنا ہے کہ گرین لائن بس سروس وفاق کا کراچی کیلئے بہت بڑا تحفہ ہے جس کا شہرِ قائد کے باسیوں کو شدت سے انتظار تھا۔ منصوبہ رواں ماہ 25 دسمبر سے آئندہ برس جنوری میں کام شروع کردے گا۔ 

فوٹو: ڈیلی پاکستان

منصوبے کی تفصیلات 

گرین لائن بس سروس میں 80 بسیں لائی  گئیں ہیں، جس کیلئے 20 سے زائد اسٹیشنزقائم کئےگئےہیں جبکہ ان بسوں کوچلانےکیلئے 200 کے قریب ڈرائیورزکو تربیت بھی دی گئی۔ گرین لائن بسیں کراچی میں دستیاب عام بسوں کے مقابلے میں جدید ترین سہولیات کی حامل ہیں۔

بسوں میں دستیاب سہولیات 

کراچی کے عوام گرین لائن بس سروس کو استعمال کرتے ہوئے نہ صرف سفر کرسکیں گے بلکہ انٹرنیٹ کے استعمال کیلئے وائی فائی اور انٹرٹینمنٹ کیلئے ٹی وی اسکرین کا استعمال بھی کرسکیں گے۔بس کے اندر ڈرائیور کیلئے کاک پٹن کیبن ہونگے۔

فوٹو: اے آر وائی

مکمل طور پر ائیر کنڈیشنڈ بس سروس میں معذور افراد کیلئے الگ جگہ مختص ہوگی۔ مسافر خواتین و حضرات سفرکے دوران موبائل کی بیٹری ڈاؤن ہونے کی صورت میں چارجنگ پورٹ کا استعمال بھی کرسکیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:

سینٹرل جیل کراچی میں قیدیوں کی اصلاح کیلئے شاندار انتظامات، آنکھوں دیکھا حال 

ایک بس میں تین دروازے رکھے گئے ہیں۔ پہلا دروازہ خواتین، دوسرا فیملی جبکہ تیسرا مردوں کے داخلے کیلئے مختص کردیا گیا۔ نشستوں پر جگہ نہ ہونے کی صورت میں مسافر کھڑے ہو کر بھی سفر کرسکیں گے۔ 

تعارفی کرایہ  اور کارڈ 

ابتدائی طور پر گرین لائن بسوں میں کم از کم کرایہ 15 جبکہ زیادہ سے زیادہ 55روپے مقرر کیا گیا ہے۔ سرجانی ٹاؤن سے سفر کی ابتدا کرنے والی گرین بس نمائش چورنگی تک جائے گی اور پھر راؤنڈ اباؤٹ لے کر واپس سرجانی پہنچے گی۔

فوٹو: ڈیلی پاکستان

عموماً کراچی میں بسوں کے ذریعے سفر کرنے والوں کو شہر میں ایک جگہ سے دوسری جگہ آمدورفت کیلئے کم از کم 20 روپے اور زیادہ سے زیادہ 80 روپے تک کرایہ ادا کرنا پڑ رہا ہے اور بعض جگہ اس سے بھی زائد کرایہ وصولی کی شکایات آئی ہیں۔ 

نیا گرین لائن بس منصوبہ کراچی کے شہریوں کیلئے رواں ماہ سے کام شروع کردے گا۔ کمرشل آپریشن کے آغاز کی تاریخ 25دسمبر مقرر کی گئی ہے۔ کوئی بھی مسافر ایک پورے دن کیلئے 100 روپے کا کارڈ خرید کر بس میں آمدورفت کی سہولت حاصل کرسکے گا۔ 

دیگر معلومات 

یہ کوئی نیا منصوبہ نہیں ہے۔ 2016 سے تاخیر کا شکار گرین لائن بسوں کے منصوبے کی پہلی کھیپ رواں برس ستمبر کے دوران کراچی پہنچی تھی۔ ایک بس 200 سے 250 افراد کو سفری سہولت مہیا کرسکتی ہے۔

فوٹو: اباؤٹ پاکستان

وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا ہے کہ گرین لائن راہداری 22 کلومیٹر طویل ہے جس پر گرین لائن منصوبے کے تحت کراچی کے 1 لاکھ 35 ہزار مسافر روزانہ سفر کرسکیں گے۔ 

تبصرے: 0

آپ کا ای میل پتہ شائع نہیں کیا جائے گا۔ مطلوبہ فیلڈز * کے ساتھ نشان زد ہیں