عدالت نے ایلون مسک کیخلاف دائر کردہ مقدمے کی تفصیلات عام کردیں

عدالت نے ایلون مسک کیخلاف دائر کردہ مقدمے کی تفصیلات عام کردیں

امریکی ریاست ڈیلاور کی چانسلری عدالت نے مائکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر کی جانب سے گزشتہ ماہ جولائی میں ایلون مسک کے خلاف دائر کردہ مقدمے کی تفصیلات عام کردیں۔

تفصیلات کے مطابق خبر رساں ادارے ’ایسوسی ایٹڈ پریس‘ (اے پی) نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ عدالت نے ٹوئٹر کے مقدمے کی تفصیلات عام کرتے ہوئے فیصلہ سنایا کہ جلد ہی ایلون مسک کے جواب کی تفصیلات بھی عام کردی جائیں گی۔

واضح رہے کہ ٹوئٹر نے جولائی کے وسط میں ایلون مسک کے خلاف مقدمہ دائر کرتے ہوئے عدالت سے استدعا کی تھی کہ انہیں اپنا خریداری کا معاہدہ مکمل کرنے کا حکم دیا جائے۔

عدالت کی جانب سے جو تفصیلات عام کی گئی ہیں اُن کے مطابق ایلون مسک پلیٹ فارم کو خریدنے کے مختلف اور بے بنیاد جواز پیش کر رہے ہیں، انہیں ایسا کرنے سے روکا جائے اور انہیں اپنا معاہدہ مکمل کرنے پر مجبور کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:

شعیب اختر کی مداحوں سے کامیاب سرجری کیلئے دعاؤں کی اپیل

ٹوئٹر کے مقدمے میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ ایلون مسک جرمانے سے بچنے کے لیے اپنی غلطی کو چھپاتے ہوئے پلیٹ فارم پر الزامات لگا رہے ہیں۔

معلوم رہے کہ ٹوئٹر کے مقدمے کی تفصیلات کے ایک دن بعد تک ایلون مسک کے جواب کی تفصیلات کو بھی عام کیے جانے کا امکان ہے۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹرنے ایلون مسک پر اس وقت مقدمہ دائر کیا تھا جب انہوں نے پلیٹ فارم پر جعلی اکاؤنٹس کی بھرمار کی وجہ سے اسے نہ خریدنے کا اعلان کیا تھا۔

ایلون مسک کی جانب سے ٹوئٹر کو نہ خریدنے کا اعلان کرنے کے بعد پلیٹ فارم نے ان پر مقدمہ دائر کیا جس کے جواب میں ایلون مسک نے بھی عدالت میں اپنا بیان جمع کروایا تھا۔

مزید برآں ٹوئٹر نے اپنے مقدمے میں عدالت سے جلدازجلد مقدمہ شروع کرنے کی استدعا کی تھی جب کہ ایلون مسک نے مقدمے کا ٹرائل آئندہ برس شروع کرنے کی اپیل کی تھی۔

عدالت نے دونوں فریقین کے دلائل دیکھنے کے بعد گزشتہ ماہ جولائی میں ہی فیصلہ سنایا تھا کہ مذکورہ ٹرائل کا آغاز اکتوبر کے آغاز میں ہوگا اور اب عدالت نے دونوں فریقین کی درخواستوں کو عام کردیا۔

تبصرے: 0

آپ کا ای میل پتہ شائع نہیں کیا جائے گا۔ مطلوبہ فیلڈز * کے ساتھ نشان زد ہیں