پاکستان نے پیٹرول سستا کرنے کیلئے روس سے تیل خریداری کا معاہدہ کرلیا

موسم

قیمتیں

ٹرانسپورٹ

گوگل نیوز پر ہمیں فالو کریں

اسلام آباد: پاکستان نے پیٹرول سستا کرنے کیلئے روس سے تیل خریداری کا طویل المدت معاہدہ کر لیا ہے جس کے تحت روس 60ڈالر فی بیرل قیمت پر تیل مہیا کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے روس سے طے معاہدے کے تحت مقامی ریفائنریوں کو روس سے براہِ راست تیل خریدنے کی اجازت دے دی گئی۔ روس سے تیل خریداری کی صورت میں 60ڈالر فی بیرل کے حساب سے پاکستان کو ملنے والا تیل پورٹ پر پہنچایا جائے گا۔

نگران وزیرِ اعظم انوار الحق کاکڑ سے 2 چینی کمپنیوں کے سربراہان کی ملاقات

طویل المدت معاہدے کے تحت روس سے تیل کا پہلا کارگو دسمبر میں پاکستان پہنچے گا۔ حکام کا کہنا ہے کہ معمول کی سپلائی کے بعد سرکاری سطح پر پاک روس تیل معاہدہ کمرشل بنیادوں پر کیا گیا ہے۔دسمبر میں آنے والے پہلے کارگو میں 1 لاکھ میٹرک ٹن خام تیل پاکستان پہنچے گا۔

تاہم کمرشل بنیادوں پر بھی پاکستان روس سے سستا تیل ہی خریدے گا۔ حکام کا کہنا ہے کہ پاکستان نے پہلے ٹیسٹ کارگو میں بھی 4کروڑ ڈالر کی بچت کی اور آئندہ بھی روس سے سستا تیل خرید کر ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کنٹرول کی جائیں گی۔ 

حکام کا کنہا ہے کہ کمرشل معاہدہ کرتے وقت جی 7 ممالک کی جانب سے روسی تیل کی قیمت کی حد مدِ نظر رکھی گئی ہے۔ روسی خام تیل کرایہ پریمیئم وغیرہ نکال کر بھی عام مارکیٹ کے مقابلے میں 10 ڈالر فی بیرل کم قیمت ہوگا۔ 

Related Posts