اسرائیلی فوجی کی فلسطینی کے گھر میں گھس کر شرمناک حرکت

غزہ پر جنگ شروع ہونے کے بعد سے سوشل میڈیا پر بھی اسرائیلی اشتعال انگیزی جاری ہے۔

سفاک اسرائیلی فوجیوں کی جانب سے فلسطینیوں کے گھروں میں کھانا پکانے سے لے کر ان کو زبردستی گھر سے باہر نکالنے اور گھروں کو اڑانے تک اور بہت سی وحشیانہ حرکات کر کے مذاق اڑانے کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جارہی ہیں۔

اس طرح کے ایک تازہ واقعے میں غزہ شہر کے مغرب میں الرمل محلے میں تعینات اسرائیلی فوجی ہارون رافیل نے چند گھنٹے قبل اپنے “ٹک ٹاک” پر ایک ویڈیو پوسٹ کی، جس میں وہ فلسطینیوں کے گھروں میں لوٹ مار کرتے ہوئے اور مہنگی گھڑیاں چوری نظر آتے ہیں۔

اس کلپ میں فوجی کو ایک گھر کے اندر گھومتے ہوئے بھی دکھایا گیا تھا جو کئی مہینوں سے جاری اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں مکینوں سے خالی ہو گیا تھا اور پھر اس نے اپنے کیمرے سے اس جگہ پر ہونے والی تباہی کو فلمانا شروع کر دیا۔

ایسی ہی بعض ویڈیوز میں غزہ کے اندر انسانی امداد، تباہی اور گھروں اور شہریوں پر بمباری کے مناظر فخریہ انداز میں دکھائے گئے ہیں۔

دریں اثنا متعدد فوجیوں نے ایسی ویڈیوز پوسٹ کیں جن میں وہ فلسطینیوں کے گھروں میں داخل ہوئے اور بیڈ رومز، یہاں تک کہ الماریوں کے اندر موجود چیزوں کا بھی مذاق اڑاتے ہوئے دکھائی دیے۔

ان “اشتعال انگیز” اقدامات نے سوشل میڈیا اور اسرائیل کے اندر بھی غم و غصے کو جنم دیا، جس نے فوج کو یہ اعلان کرنے پر مجبور کیا کہ اس نے اپنے فوجیوں کے ان حرکتوں کی تحقیقات شروع کر دی ہیں تاہم ابھی تک ان تحقیقات کے نتائج کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہے۔

تبصرے: 0

آپ کا ای میل پتہ شائع نہیں کیا جائے گا۔ مطلوبہ فیلڈز * کے ساتھ نشان زد ہیں