اسرائیل کیخلاف لڑنے کیلئے ہمارے مجاہدین تیار ہیں، مولانا فضل الرحمن

جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ یہودی لابی نے جس ایجنٹ کو پاکستان بھیجا اس کو شکست دے دی, اب اسرائیل کو بھی شکست دیں گے۔ فلسطین کی آزادی تک جنگ جاری رہےگی، فلسطینی ریاست کے قیام تک ہم ان کے ساتھ ہیں۔

فلسطینی عوام سے اظہار یکجہتی اور اسرائیلی جارحیت کے خلاف جمعیت علمائے اسلام نے کوئٹہ میں طوفان اقصیٰ کانفرنس کا انعقاد کیا۔ کانفرنس سے خطاب میں مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہم اپنے فلسطینی بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں، آزادی کی جنگ میں فلسطینیوں کے ساتھ ہیں، جنگ میں برابر کے شریک ہونے کا اعلان کرتے ہیں، ہم اپنے مجاہدین کے ساتھ جنگ کیلئے تیار ہیں۔

ایلون مسک کی جانب سے اسٹار لنک کے ذریعے غزہ کو انٹرنیٹ فراہمی کا اعلان، اسرائیل کو آگ لگ گئی

انھوں نے کہا کہ دنیا میں آج واضح نظریاتی تقسیم ہے، جنہیں تم دہشت گرد کہتے ہو ہم انہیں مجاہدین کہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکا اب سپر پاور نہیں رہا، اپنے حکمرانوں سے کہتا ہوں امریکا کی غلامی چھوڑ دو، آج پھر بزدلی کا مظاہرہ کیا توعوام آپ کے مقابلےمیں کھڑے ہوں گے۔

سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ حکمران غیرت کا مظاہرہ کریں، یہودی لابی نے جس ایجنٹ کو پاکستان بھیجا اس کو شکست دے دی، اسرائیل کو بھی شکست دیں گے، آج وہ ایجنٹ مکافات عمل کا شکار ہے۔ انھوں نے کہا کہ بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کھل کر اسرائیل کی حمایت کررہا ہے، ہمارے حکمرانوں میں ہمت ہی نہیں ہے، محلوں میں عیش و عشرت کرنے والےعوام کے نمائندے نہیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ کیا دنیا کو فلسطین میں ہونے والے مظالم ںظر نہیں آرہے، ہم نے پاکستان کو بھی غلامی سے نکالنا ہے، ہم نے پاکستان انگریزوں کی غلامی کیلئے حاصل نہیں کیا تھا، ہمارے بزرگ انگریزوں کےخلاف لڑے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اسمبلیاں جے یو آئی کی کمزوری نہیں ہیں، اسمبلیوں میں رہیں نہ رہیں، سڑکوں پر رہیں گے، ہم نے اپنے جذبے کو زندہ رکھنا ہے، اوآئی سی کا اجلاس بلایا جائے اور متفقہ موقف لیا جائے، ہم اپنے موقف سے دستبردار نہیں ہوں گے۔