کرسٹینا کوچ ایک سال طویل خلائی مشن مکمل کرنے کے بعد زمین پر واپس پہنچ گئیں

کرسٹینا کوچ ایک سال طویل خلائی مشن مکمل کرنے کے بعد زمین پر واپس پہنچ گئیں

امریکی خلا باز کرسٹینا کوچ خلا میں ایک سال طویل مشن کامیابی کے ساتھ مکمل کرنے کے بعد زمین پر واپس پہنچ گئیں۔ انہوں نے مسلسل 328 دن خلا میں گزارے جو کسی بھی خاتون کا طویل ترین عرصہ ہے۔

اکتالیس سالہ کرسٹینا کوچ  نے خلا میں تقریباً ایک سال کا عرصہ گزار کر امریکا کا نام دنیا میں روشن کردیا۔ کرسٹینا کوچ نے گزشتہ روز زمین پر قدم رکھا۔

اس سے قبل کرسٹینا کوچ نے 28 دسمبر 2019ء کو طویل عرصہ خلا میں گزارنے کا ورلڈ ریکارڈ رکھنے والی ہیگی وٹسن کا ریکارڈ توڑ دیا۔وہ مسلسل 289 دن خلا میں گزارنے میں کامیاب رہیں۔

خلانورد کرسٹینا کوچ نے مختلف خلا بازوں کے ساتھ مل کر خلا میں کھانا پکانے کا تجربہ بھی کیا۔ انہوں نے گزشتہ برس کے آخری مہینے میں خلائی اسٹیشن پر خصوصی مائیکروویو اوون استعمال کرکے یہ کارنامہ انجام دیا۔

انہوں نے دسمبر کے مہینے میں اوون میں 5 قسم کی غذائیں تیار کرکے انہیں زمین پر بھیجا جو ایک الگ ورلڈ ریکارڈ قرار دیا گیا۔ اسی طرح وہ مختلف اعزازات اپنے نام کرچکی ہیں۔ 

میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے زمین کی طرف سفر کرنے سے قبل  کرسٹینا کوچ نے بتایا کہ وہ مائیکرو گریویٹی یعنی کمزور ترین کششِ ثقل کے نظارے سے ہاتھ دھو بیٹھیں گی۔

کرسٹینا کوچ کے مطابق  خلا میں زندگی انتہائی پر لطف ہوتی ہے  اور آپ جب چاہیں چھت اور فرش کے درمیان کسی گیند کی طرح اڑ کر مختلف سطحوں سے ٹکرا سکتے ہیں۔